21-May-2022 /19- Shawwāl-1443

Latest Questions


Q #
8008

اشٹام فروش سے محض طلاق لکھوانے سے طلاق ہو جاتی ہے۔؟

کیا فرماتے ھیں مفتیان کرام اس مسئلہ کے بارے میں ۔ بندہ نے2014 میں گھریلو نا چاقی کے باعث اپنی بیوی کے مطالبے پر محض اس کو ڈرانے کے لئے ایک اشٹام فروش کے پاس گیا اور اس کو کہا کہ طلاق نامہ لکھ کر دے دو۔اس نے مجھ سے کوائف پوچھے اور درج ذیل طلاق نامہ پکڑا دیا جس پر میں نے دستخط نہیں کئے ۔جس وقت اس کو کہا کہ طلاق نامہ دے دو تو یہی ارادہ تھا کہ دستخط نہیں کروں گا اور اس وقت دستخط نہیں کئے البتہ بیگم کو لا کر دکھا دئے کہ یہ کاغذات تیار کروا لایا ھو۔مجھے یہ بات بتا تھی کہ طلاق تب واقع ھوتی ھے جب دستخط کئے جائیں۔یہ بات ملحوظ رھے کہ یہ الفاظ میں نے نہیں لکھوائے بلکہ کاتب نے ازخود لکھا ھوا ایک مخصوص فارمیٹ ھاتھ سے لکھ کر دے دیا۔اس اشٹام کی عبارت درج ذیل تھی۔میں نے اس اشٹام پر 3 اکتوبر 2019 کو دستخط کئے دستخط سے پہلے طلاق کے ساتھ لکھا ھوا ثلاثہ کا لفظ کاٹ دیا ۔پھر دستخط کئے تاکہ ایک طلاق پڑے ۔البتہ عنوان سے کاٹنا رہ گیا۔ اس صورت حال میں بتائے کہ کتنی طلاق واقع ھوئی ۔نیز رجوع کیسے کیا جائے گا۔ دستاویز طلاق نامہ ثلاثہ بحق:۔ زینت بی بی دختر محمد یونس خان ساکن مکان نمبرH.55/13ایف سی ایریا کراچی سکنہ عبدالباسط ولد عبدالقیوم ساکن مکان نمبر431محلہ توحید پارک گلشن راوی بلاکBلاہور کا رہائشی ہوں ۔یہ کہ من مقراقرار کرکے لکھ دیتا ہوں کہ من مقرکی شادی ہمراہ مسمات زینت بی بی دختر محمد یونس خان ساکن مکان نمبرH.55/13ایف سی ایریاکراچی سے بالعوض حق مہرشرعی مورخہ24:04:1994کو بمطابق شریعت محمدیﷺ سر انجام پائی ۔اسی ازواج کے نتیجہ میں من مقرکے نطفے سے اور زینت بی بی کے بطن سے آٹھ بچے پیدا ہوئے ۔جو کہ بقید حیات ھیں ۔یہ کہ اب من مقر نےبقائمی ہوش وحواس خمسہ بلا جبر واکراہ وترغیب غیر کے زینت بی بی کے مصمم مطالبہ پر۔۔۔۔۔۔۔ ثلاثہ دیتاہوں طلاق ۔۔۔۔دیتا ھوں۔ ،درحقیقت زینت بی بی بڑی بدتمیز اور گستاخ زبان ہوچکی ہے۔جس کی وجہ سے فریقین کا اکھٹے رہ کر حدوداللہ میں زندگی گزارنا مشکل ہے۔یہ کہ اب اور آج سے من مقرنے زینت بی بی کو اپنے نطفہ پر حرام قرار دیتا ہوں ،یہ کہ بعد از عدت زینت بی بی جہاں چاہئے اپنی مرضی سے عقد ثانی کر سکتی ہے ۔جس پر من مقر کو کوئی عذر واعتراض نہ ہے اور نہ ہی آئندہ کبھی ہوگا۔یہ کہ طلا ق نامہ لکھ دیا ہے تاکہ سند رہے ۔اور بوقت ضرورت کام آسکے۔ مرقوم 03/7/2014 العبد عبدالباسط 35202.4432301.1

Category: divorce - Asked By: عبدالباسط - Date: Dec 05, 2019



Q #
8008

دستاویزی طلاق نامہ

کیا فرماتے ھیں مفتیان کرام اس مسئلہ کے بارے میں ۔ بندہ نے2014 میں گھریلو نا چاقی کے باعث اپنی بیوی کے مطالبے پر محض اس کو ڈرانے کے لئے ایک اشٹام فروش کے پاس گیا اور اس کو کہا کہ طلاق نامہ لکھ کر دے دو۔اس نے مجھ سے کوائف پوچھے اور درج ذیل طلاق نامہ پکڑا دیا جس پر میں نے دستخط نہیں کئے ۔جس وقت اس کو کہا کہ طلاق نامہ دے دو تو یہی ارادہ تھا کہ دستخط نہیں کروں گا اور اس وقت دستخط نہیں کئے البتہ بیگم کو لا کر دکھا دئے کہ یہ کاغذات تیار کروا لایا ھو۔مجھے یہ بات بتا تھی کہ طلاق تب واقع ھوتی ھے جب دستخط کئے جائیں۔یہ بات ملحوظ رھے کہ یہ الفاظ میں نے نہیں لکھوائے بلکہ کاتب نے ازخود لکھا ھوا ایک مخصوص فارمیٹ ھاتھ سے لکھ کر دے دیا۔اس اشٹام کی عبارت درج ذیل تھی۔میں نے اس اشٹام پر 3 اکتوبر 2019 کو دستخط کئے دستخط سے پہلے طلاق کے ساتھ لکھا ھوا ثلاثہ کا لفظ کاٹ دیا ۔پھر دستخط کئے تاکہ ایک طلاق پڑے ۔البتہ عنوان سے کاٹنا رہ گیا۔ اس صورت حال میں بتائے کہ کتنی طلاق واقع ھوئی ۔نیز رجوع کیسے کیا جائے گا۔ دستاویز طلاق نامہ ثلاثہ بحق:۔ زینت بی بی دختر محمد یونس خان ساکن مکان نمبرH.55/13ایف سی ایریا کراچی سکنہ عبدالباسط ولد عبدالقیوم ساکن مکان نمبر431محلہ توحید پارک گلشن راوی بلاکBلاہور کا رہائشی ہوں ۔یہ کہ من مقراقرار کرکے لکھ دیتا ہوں کہ من مقرکی شادی ہمراہ مسمات زینت بی بی دختر محمد یونس خان ساکن مکان نمبرH.55/13ایف سی ایریاکراچی سے بالعوض حق مہرشرعی مورخہ24:04:1994کو بمطابق شریعت محمدیﷺ سر انجام پائی ۔اسی ازواج کے نتیجہ میں من مقرکے نطفے سے اور زینت بی بی کے بطن سے آٹھ بچے پیدا ہوئے ۔جو کہ بقید حیات ھیں ۔یہ کہ اب من مقر نےبقائمی ہوش وحواس خمسہ بلا جبر واکراہ وترغیب غیر کے زینت بی بی کے مصمم مطالبہ پر۔۔۔۔۔۔۔ ثلاثہ دیتاہوں طلاق ۔۔۔۔دیتا ھوں۔ ،درحقیقت زینت بی بی بڑی بدتمیز اور گستاخ زبان ہوچکی ہے۔جس کی وجہ سے فریقین کا اکھٹے رہ کر حدوداللہ میں زندگی گزارنا مشکل ہے۔یہ کہ اب اور آج سے من مقرنے زینت بی بی کو اپنے نطفہ پر حرام قرار دیتا ہوں ،یہ کہ بعد از عدت زینت بی بی جہاں چاہئے اپنی مرضی سے عقد ثانی کر سکتی ہے ۔جس پر من مقر کو کوئی عذر واعتراض نہ ہے اور نہ ہی آئندہ کبھی ہوگا۔یہ کہ طلا ق نامہ لکھ دیا ہے تاکہ سند رہے ۔اور بوقت ضرورت کام آسکے۔ مرقوم 03/7/2014 العبد عبدالباسط 35202.4432301.1

Category: divorce - Asked By: عبدالباسط - Date: Nov 12, 2019



Q #
7308

قربانی کس پر واجب ہے۔؟

اسلام علیکم مفتی صاحب! ایک مسئلہ آپکے گوش گزار کرنا ہے جسکی جوابی وضاحت آپ سے درکار ہے۔ ایک گھر میں والدین کے 6 بچے ہیں 1 شادی شدہ بیٹا جو کہ والدین سے الگ رہتا ہے جو کہ بہت زیادہ مقروض بھی ہے اور مستقل برسر روزگار بھی نہیں ہے۔ اور 5 بالغ بیٹیاں ، 2 بیٹیاں سرکاری ملازمت کر رہی ہیں۔ 5 بیٹیاں اپنی جیب خرچ میں سے جذبہ قربانی کے تحت کچھ رقم محفوض کئے ہوئے ہیں مگر وہ رقم قربانی کا حصہ ملانے کے لئے نا کافی ہے اور والد بھی قربانی نہیں کرتے اور نہ ہی کرنے دیتے ہیں۔ جمع شدہ جیب خرچ رقم کے بارے میں کیا حکم ہے شریعت کی رو سے۔ جس مقدار سونا یا چاندی میں قربانی واجب ہوتی ہے وہ مقدار گھر میں موجود ہے۔ مگر گھر کا نظام چلانے والے والد گھرانے کو غریب کہتے ہیں اور قربانی و زکوٰۃ ادا نہیں کرتے تو اس صورت میں بیٹیوں پر شریعت کی رو سے کیا حکم لاگو ہوتا ہے۔ براہ کرم وضاحت فرمائیں موقع کی نزاکت کے اعتبار سے جواب جلدی عنائیت فرمائیں۔ شکریہ!

Category: Sacrifice - Asked By: عبدالھادی - Date: Sep 15, 2020



Q #
7299

حیض کے بارے میں

السلام علیکم۔۔ بیٹی کی پیدائش کے بعد تین چار ماہ سے حیض کی ترتیب خراب ہوئی ہے، پہلے ہمیشہ مہینہ وار دن آتے تھے، اب کبھی پندرہ دن بعد کبھی اس سے بھی کم عرصہ گزرنے پر،۔ 1️⃣ایک دفعہ پندرہ دن کے بعد حیض آیا اور چار دن کے بعد ختم، جبکہ عادت سات دن کی ہے، اس لئے سات دن تک انتظار کیا، پھر غسل کر لیا، اب اگلی مرتبہ غسل کے تیرہ دن بعد ڈیٹ آ گئی، تو جو دو دن کم ہیں پندرہ سے، کیا وہ حیض ہی شمار ہو گا؟ (کہ پچھلی مرتبہ پاکیزگی چار دن بعد آ گئی تھی مگر غسل نہ کیا) ◀️ اور پچھلے تین دن کی نمازیں شمار کرکے قضا کر لیں، تو یہ ٹھیک ہے؟ یا چار دن بعد پاکیزگی آنے پر فورا غسل کرنا ضروری ہے؟ براہ کرم رہنمائی فرما دیجئے 2️⃣اور پھر پندرہ یا سترہ دن بعد ڈیٹ آجائے، اور تین دن سے پہلے ختم ہو جائے، یعنی استحاضہ ہو، تو تین دن انتظار کے مکمل کر کے نماز شروع کر لی جائے، اور اس کے بعد ہفتہ یا کم / زیادہ دن کے بعد اگر ڈیٹ آجائے تو اس کی مدت کب سے شمار کی جائے گی؟ گذشتہ استحاضہ سے، یا اس سے پچھلے حیض سے۔۔۔ براہ مہربانی مسئلہ سمجھا دیجئے، اللہ آپ سے راضی ہو آمین۔

Category: Menses - Asked By: ام عمارہ - Date: Mar 12, 2020



Categeories