21-May-2022 /19- Shawwāl-1443

Question # 8031


B4u کمپنی میں انویسٹمنٹ کا حکم

ایک کمپنی بین الاقوامی ھے b4uکے نام سے۔اس کو بروشر بھیجا جا رھا ھے اس حوالے سے آپ اپنی رائے آگاہ کر دیں کہ کیا اس میں انویسٹمنٹ حلال ھے؟
دار العلوم کراچی کا فتوی بھی منسلک ھے ۔

Category: Partnerships - Asked By: ام عبداللہ - Date: Sep 15, 2020



Answer:


الجواب باسم ملھم الصواب
حامدا ومصلیا

b4u کے کاروبار کے حوالے سے معلومات نا کافی ھیں دارالعلوم کراچی کے فتوی میں بھی یہی لکھا ھے کہ اگر مذکورہ کمپنی کا کوئی شریعہ ایڈوائزر اور شرعی آڈٹ ھوتا ھے تو فتوی دیا جا سکتا ھے ورنہ نہیں ۔ مذکورہ کمپنی کی ویب سائٹ اور بروشر کا جائزہ لینے کے بعد کئی اشکالات سامنے آئے ھیں۔۔اس کا بنیادی کاروبار کرپٹو کرنسی میں ھے جو کہ جائز نہیں۔
اسی طرح کمپنی فلم انڈسٹری میں بھی پیسہ لگا رھی ھے ۔پیسے کی تقسیم اور لین دین کے معاھدہ بھی شرعی طور پر درست نہین۔
اس لئے اس کمپنی میں انویسٹمنٹ سے گریز کیا جائے

واللہ اعلم بالصواب
کتبہ محمد حماد فضل
نائب مفتی دارالافتا جامعہ طہ
الجواب صحیح
مفتی زکریا دامت برکاتہم
مفتی جامعہ اشرفیہ لاھور

16 اگست 2020



Share:

Related Question:

Categeories