21-May-2022 /19- Shawwāl-1443

Questions Under: Sacrifice


Q #
7308
اسلام علیکم مفتی صاحب! ایک مسئلہ آپکے گوش گزار کرنا ہے جسکی جوابی وضاحت آپ سے درکار ہے۔ ایک گھر میں والدین کے 6 بچے ہیں 1 شادی شدہ بیٹا جو کہ والدین سے الگ رہتا ہے جو کہ بہت زیادہ مقروض بھی ہے اور مستقل برسر روزگار بھی نہیں ہے۔ اور 5 بالغ بیٹیاں ، 2 بیٹیاں سرکاری ملازمت کر رہی ہیں۔ 5 بیٹیاں اپنی جیب خرچ میں سے جذبہ قربانی کے تحت کچھ رقم محفوض کئے ہوئے ہیں مگر وہ رقم قربانی کا حصہ ملانے کے لئے نا کافی ہے اور والد بھی قربانی نہیں کرتے اور نہ ہی کرنے دیتے ہیں۔ جمع شدہ جیب خرچ رقم کے بارے میں کیا حکم ہے شریعت کی رو سے۔ جس مقدار سونا یا چاندی میں قربانی واجب ہوتی ہے وہ مقدار گھر میں موجود ہے۔ مگر گھر کا نظام چلانے والے والد گھرانے کو غریب کہتے ہیں اور قربانی و زکوٰۃ ادا نہیں کرتے تو اس صورت میں بیٹیوں پر شریعت کی رو سے کیا حکم لاگو ہوتا ہے۔ براہ کرم وضاحت فرمائیں موقع کی نزاکت کے اعتبار سے جواب جلدی عنائیت فرمائیں۔ شکریہ!

Category: Sacrifice - Asked By: عبدالھادی - Date: Sep 15, 2020











Categeories