03-Jul-2020 /12- Dhū al-Qa‘dah-1441

Questions Under: Menses


Q #
7299
السلام علیکم۔۔ بیٹی کی پیدائش کے بعد تین چار ماہ سے حیض کی ترتیب خراب ہوئی ہے، پہلے ہمیشہ مہینہ وار دن آتے تھے، اب کبھی پندرہ دن بعد کبھی اس سے بھی کم عرصہ گزرنے پر،۔ 1️⃣ایک دفعہ پندرہ دن کے بعد حیض آیا اور چار دن کے بعد ختم، جبکہ عادت سات دن کی ہے، اس لئے سات دن تک انتظار کیا، پھر غسل کر لیا، اب اگلی مرتبہ غسل کے تیرہ دن بعد ڈیٹ آ گئی، تو جو دو دن کم ہیں پندرہ سے، کیا وہ حیض ہی شمار ہو گا؟ (کہ پچھلی مرتبہ پاکیزگی چار دن بعد آ گئی تھی مگر غسل نہ کیا) ◀️ اور پچھلے تین دن کی نمازیں شمار کرکے قضا کر لیں، تو یہ ٹھیک ہے؟ یا چار دن بعد پاکیزگی آنے پر فورا غسل کرنا ضروری ہے؟ براہ کرم رہنمائی فرما دیجئے 2️⃣اور پھر پندرہ یا سترہ دن بعد ڈیٹ آجائے، اور تین دن سے پہلے ختم ہو جائے، یعنی استحاضہ ہو، تو تین دن انتظار کے مکمل کر کے نماز شروع کر لی جائے، اور اس کے بعد ہفتہ یا کم / زیادہ دن کے بعد اگر ڈیٹ آجائے تو اس کی مدت کب سے شمار کی جائے گی؟ گذشتہ استحاضہ سے، یا اس سے پچھلے حیض سے۔۔۔ براہ مہربانی مسئلہ سمجھا دیجئے، اللہ آپ سے راضی ہو آمین۔

Category: Menses - Asked By: ام عمارہ - Date: Mar 12, 2020









Categeories